پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے ان خیالات کا اظہار گھوٹکی میں علی محمد مہر کے انتقال پر ان کے اہل خانہ سے تعزیت کےبعد  میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ میں ایک بار پھر کوئٹہ دھماکے کی مذمت کرتا ہوں۔

 

انھوں نے کہا کہ بلوچستان میں باربارکی دہشت گردی کےمعاملے پرتوجہ کی ضروری ہے، نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد پیپلز پارٹی کا دیرینہ مطالبہ ہے، حکومت نیشنل ایکشن پلان پر سنجیدہ نہیں ہے۔

 

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم کی جانب سے نیکٹا کا آج تک ایک اجلاس نہیں بلایا گیا، انتہاپسندی، دہشت گردی سے متعلق پیپلزپارٹی کی پالیسی واضح ہے،پیپلزپارٹی جب بھی حکومت میں آئی، دہشت گردی کیخلاف واضح اقدامات کئے۔

 

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ملک میں جگہ جگہ پھر سے دہشت گردی کے واقعات ہورہے ہیں، حکومت کو انتہا پسندوں کا مقابلہ کرنا ہوگا،انہوں نے کہا کہ مہر فیملی سے ہمارا خاندانی وسیاسی تعلق ہے، دعاگو ہوں کہ خدا مشکل وقت میں سوگوار خاندان کو ہمت دے۔

 

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے