وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے اپنے ٹوئٹر بیان میں اعلان کیا کہ مجھے بہت خوشی ہے کہ پہلے پاکستانی خلاباز کے لیے انتخابی عمل 2020 سے شروع ہو رہا ہے۔

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے اعلان کیا ہے کہ پاکستانی خلا باز کے لیے سلیکشن کے عمل کا آغاز اگلے برس سے شروع ہو گا۔

انہوں نے بتایا کہ پہلے مرحلے میں 50 خلانورد شارٹ لسٹ کریں گے جن میں سے 25 فائنل مرحلے میں جائیں گے اور 2022 میں انشاء اللّہ پہلا پاکستانی خلا میں جائے گا، یہ پاکستانی اسپیس پروگرام کے لیے تاریخ ساز اقدام ہو گا۔

وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد مزید کہنا تھا کہ عام طور پر خلا میں جانے کیلئے پائلٹس کا انتخاب کیا جاتا ہے، ایئرفورس کے پائلٹس کی ٹریننگ اچھی ہوتی ہے، پاکستان میں بھی ایئرفورس ہی خلاباز کا انتخاب کرےگی۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا سائنس اور ٹیکنالوجی میں وزیراعظم کی خصوصی توجہ ہے، جس کے پاس سائنس اینڈٹیکنالوجی سےمتعلق آئیڈیاز ہیں ہم سے شیئر کرے۔

ان کا کہنا تھا سیاستدان ہوں سائنسدان نہیں،سیاست پرتوبات کروں گا، ہماراسب سےبڑامسئلہ منصوبہ سازی نہ ہونےسےپیسوں ضیاع ہے، وزارت سائنس اینڈٹیکنالوجی کوپیپرلیس کردیاہے۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے کہا چیئرمین ایچ ای سی قابل ہیں ان کاپلان تکمیل کوپہنچاتوملک کی کامیابی ہوگی، مسئلہ یہ ہےکہ ہمارا بیوروکریٹ،پروفیسرکوکچھ سمجھتاہی نہیں، ٹیکنالوجی کےاستعمال سےمنچھرجیل کی صفائی کرناچاہتےہیں۔

فواد چوہدری نے ملک کی ترقی کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے مزید لکھا کہ اس سفر میں ہم سب کو ایک دوسرے کا ساتھ دینا ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے