وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں دیگر کئی اہم فیصلوں کے ساتھ کرکٹ کے حوالے سے بھی اہم امور زیر غور لائے گئےاور کابینہ اجلاس میں کرکٹ بورڈ کے نئے آئین کی منظوری دے دی گئی، جبکہ پاکستان فرسٹ کلاس کرکٹ کا نیا اسٹرکچر بھی عید کے بعد لاگو کیا جائے گا۔

 

رواں سال جون میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے نئے آئین کا مسودہ منظوری کے لیے وزارت بین الصوبائی رابطہ کو بھیجا تھا جہاں سے منظوری کے بعد اب اسے وفاقی کابینہ میں حتمی منظوری کے لیے پیش کیا گیا۔ پی سی بی کے نئے آئین کے مطابق گورننگ بورڈ میں پیٹرن کے 2 نمائندے شامل ہوں گے، 4 آزاد ڈائریکٹرز پی سی بی گورننگ بورڈ کا حصہ ہوں گے۔ذرائع کا کہنا تھا کہ نئے آئین میں ڈپارٹمنٹس کی جگہ اب صوبائی ٹیمیں ڈومیسٹک کرکٹ کا حصہ ہوں گی۔

آزاد ڈائریکٹرز میں ایک خاتون ڈائریکٹر کا ہونا لازمی ہوگا، سیکریٹری آئی پی سی، بورڈ چیف ایگزیکٹو بھی گورننگ بورڈ کا حصہ ہوں گے۔

 

نئے آئین کے تحت پنجاب، جنوبی پنجاب، سندھ، کے پی کے، بلوچستان اور کیپٹل ایریاز کے نام سے 6 ٹیمیں فرسٹ کلاس ٹورنامنٹ کھیلیں گی اور ہر ریجن کی ایک ایک ٹیم گریڈ 2 ٹورنامنٹ میں کھیلے گی جس کے میچ تین روزہ ہوں گے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے ڈپارٹمنٹل سسٹم کی مخالفت کی تھی اور آسٹریلوی طرز کا ڈومیسٹک کرکٹ کا سسٹم لانے کا اعلان کیا تھا۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے