وزیراعظم عمران خان نے مقبوضہ کشمیرکی صورتحال پر اپنے ٹوئٹ میں کہا ہے کہ بھارت نسل کشی کےذریعے مقبوضہ کشمیرکا جغرافیہ تبدیل کرنے کی کوشش کررہا ہے جس کے تحت مسلمانوں کواقلیت میں تبدیل کیا جائے گا۔

 

انھوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو، کریک ڈاؤن اور کشمیریوں کا قتل عام آر ایس ایس کے نظریات کے مطابق ہورہا ہے البتہ اب یہ سب کچھ دنیا کے سامنے بے نقاب ہوگیا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ ’’کشمیریوں کا قتل عام نازی پارٹی کے نظریات سے متاثر راشٹیہ سوایم سویک سنگھ کے نظریے کے مطابق ہورہا ہے، نسل کشی جیسے اقدام کو کر کے بھارتی کشمیر کا جغرافیہ تبدیل اور مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنا چاہتا ہے‘‘۔

 

وزیراعظم نے سوال کیا کہ ’’کیا ساری دنیا مقبوضہ کشمیر میں وہ کچھ ہوتا دیکھے گی جو ظلم ہٹلر نے میونخ میں کیا تھا؟‘‘۔ ڈر ہے آر ایس ایس، نازی پارٹی کا نظریہ کشمیر میں رکنے والا نہیں اور یہ رکنے کے بجائے ہندوستان میں رہنے والے مسلمانوں کی علیحدگی کی وجہ بنے گا اور آخر میں اسے بنیاد بنا کر پاکستان کو نشانہ بنایا جائے گا۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے