بھارتی وزیر برائے خارجہ امورسبرامنیم جےشنکران دنوں چین کے دورے پر ہیں ان کا مقصد مقبوضہ کشمیرکے حوالے سے مودی سرکار کے اقدام پر چین کو اعتماد میں لینا تھا اس حوالے سے انھوں نے بیجنگ میں چینی وزیر خارجہ وانگ ای سے ملاقات کی اور بھارتی مؤقف بیان کیا جسے چین نے مسترد کردیا۔

 

ملاقات کے دوران چینی وزیرخارجہ نے مقبوضہ کمشیر میں بھارت کے یکطرفہ اقدام کے حوالے سے کہا کہ کشمیر کےحوالےسے چین کا مؤقف اصولی ہے، امید ہے بھارت خطے کے امن و استحکام کے لیے تعمیری کردار ادا کرے گا،اس موقع پر بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر نے وضاحت کی کہ بھارت تحمل کا مظاہرہ کرنے اور پاکستان کے ساتھ تعلقات کو بہتر کرنے کا خواہاں ہے۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت سرحد پر امن برقرار رکھنے کے حوالے سے چین کے ساتھ ہونے والی مفاہمت پر کاربند رہے گا اور تمام سرحدی تنازعات کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کیلئے چین کے ساتھ مل کر کام جاری رکھے گا، بھارتی وزیر خارجہ نے کہا کہ ان کا ملک رواں برس چینی صدر اور نریندر مودی کے درمیان غیر رسمی ملاقات کا خواہاں ہے اور اس ملاقات کو کامیاب بنانا چاہتا ہے۔

 

یاد رہے کہ پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی چین کا دورہ کرتے ہوئے چینی حکام کو بھارتی اقدام کے حوالے سے پاکستانی تشویش سے آگاہ کیا تھا جواب میں چین نے سلامتی کونسل سمیت ہر سطح پر پاکستانی مؤقف کی تائید کا یقین دلایا تھا۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے