امریکی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق قانونی طورپرامریکاآنےوالےامیگرینٹس کیلئے بھی اب مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے، ٹرمپ انتظامیہ نےامیگرینٹس کے لئے نیا متنازع قانون متعارف کرادیا ہے، نئے قانون کو پبلک چارج کا نام دیا گیا ہے ، جس میں حکومتی امداد حاصل کرنے والے امیگرینٹس کے گرین کارڈ منسوخ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ فوڈ اسٹیمپس، میڈی کیڈ اور مفت گھر والے امیگرینٹس کے گرین کارڈز منسوخ ہوں گے۔

 

 

ڈائریکٹرامیگریشن سروسزکا کہنا ہےکہ نیا قانون 21 سال سےکم عمر،حاملہ خواتین پرلاگو نہیں ہوگا، قانون کامقصد امیگرینٹس کو اپنے پاؤں پرکھڑا کرنا ہے،حکومت پربوجھ امیگرینٹس کے گرین کارڈ منسوخ ہوں گے۔

رواں سال مئی میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مجوزہ امیگریشن اصلاحات پیش کئیں تھیں ، جس کے تحت امریکامیں امیگریشن کیلئے کینیڈا کی طرح پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرانے کا عندیہ دیا گیا تھا، اس حوالے سے امریکی صدرٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ اب میرٹ اورپیشہ وارانہ مہارت کی بنیادپرامریکا میں امیگریشن دی جائے گی ، اگرڈیموکریٹس نے مخالفت کی توآئندہ سال ریپبلکن ایوان سےبل منظورکرالیں گے، ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا اس منصوبے کےتحت گرین کارڈز کی تعدادگزشتہ سالوں کے برابر ہی رکھی جائے گی ، نیا امیگریشن سسٹم دنیا میں ہمیں قابل فخر بنائےگا۔

 

بعد ازاں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پیش کردہ نئی امیگریشن اصلاحات کو ڈیموکریٹس نے مسترد کردیا تھا۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے