میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارت کی مختلف ریاستوں میں طوفانی بارشوں سے 202 افراد زندگی کی بازی ہار گئے. بارشوں‌نے سب سے زیادہ تباہی ریاست کیرالا میں مچائی. تیز بارشوں سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے، بجلی کا نظام بیٹھ گیا، عوام گھروں پر محصور ہوگئے.

 

امدادی کارروائیاں طوفان کی شدت کا مقابلہ نہیں کرسکیں. ذرائع مواصلات معطل ہونے کے باعث متاثرین کی بحالی میں شدید مشکلات پیش آئیں.کیرالا سرکار نے 88 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے، ہلاکتوں میں‌ مزید اضافہ متوقع ہے. چالیس سے زائد افراد لاپتا ہیں. بھارت کے ساحلی علاقوں میں مون سون کی موسلا دھار بارشوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے، جن میں مزید شدت کا خدشہ ہے.

 

کرناٹک بھی طوفانی بارشوں کی لپیٹ میں آیا، جس نے نظام زندگی درہم برہم کر دیا. 48 افراد اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔خیال رہے کہ گزشتہ برس بھی یہ علاقے شدید بارشوں کی لپیٹ میں آئے تھے، ساڑھ چار سو افراد لقمہ اجل بن گئے.حالیہ بارشوں اور سیلابوں سے متاثرہ بارہ لاکھ افراد کو مختلف شہروں میں قائم عارضی کیمپوں میں منتقل کیا جا چکا ہے۔

 

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے