ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے جاپانی وزیراعظم شینزو آبے کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں جوہری معاہدے اور دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال کیا،ایرانی وزیرخارجہ نے جاپانی وزیراعظم کے ساتھ ملاقات کے موقع پر دو طرفہ، جوہری معاہدے کی تازہ ترین صورتحال، علاقائی اورعالمی مسائل بالخصوص خلیج فارس اور مشرق وسطی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

محمد جواد ظریف منگل کے روز جاپان کے دورے پربیجنگ پہنچے جہاں انہوں نے اپنے چاپانی ہم منصب کونو تارو کیساتھ ملاقات کی،واضح رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے دورہ جاپان سے پہلے چین کا دورہ کیا جہاں انہوں نے اپنے چینی ہم منصب وانگ یی کے ساتھ ملاقات کی،جواد ظریف، جاپان کے سرکاری دورے کے بعد ملائیشیا کا دورہ کریں گے،چین اور جاپان، ایرانی تیل کے سب سے بڑے برآمد کنندہ ممالک میں سے ہیں۔

دوسری جانب یورپی ممالک نے خیال ظاہر کیا ہے کہ ایران اور امریکہ کشیدگی میں کمی آرہی ہے اور امکان ہےکہ آئندہ کچھ دنوں میں اس حوالے سے نمایاں اور مثبت پیش رفت ہوسکتی ہے، جبکہ امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کے لہجے مین بھی نرمی دیکھی جارہی ہے، ایران اپنےاصولی موقف کو واضح کرنے کیلئے تمام تر سفارتی کوششیں بروئے کار لارہا ہے اس ضمن مین وزیر خارجہ جواد ظریف مختلف ممالک کے مسلسل دوروں مین مصروف ہیں جس کے نتائج بھی حوصلہ افزاء نظر آرہے ہیں۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے