کشمیر میڈیا سروس کے مطابق اب بھارتی ریاست چھتیس گڑھ کے نکسل علیحدگی پسندوں نے بھی آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کے بھارتی حکومت کے اقدام کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے،کے ایم ایس کے مطابق نکسل علیحدگی پسندوں نے مقبوضہ کشمیر کے عوام کی تحریک آزادی کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ آرٹیکل 370 بی جے پی اور انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس نے مل کر ختم کیا۔

بھارتی میڈیا کےمطابق نکسل علیحدگی پسندوں نے انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس سے تعلق رکھنے والی اہم ترین شخصیت اور سابق سرپنچ دادو سنگھ کو بھی قتل کردیا،نکسل علیحدگی پسندوں کی جانب سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے آرٹیکل 370 کے خاتمے کے اقدام کو بھی بھرپور تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا گیا ہے کہ کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کے گٹھ جوڑ نے مقبوضہ کشمیر سے آرٹیکل 370 ختم کیا ہے۔

اس سے قبل بھارت کی بڑی غیرمسلم شورش زدہ ریاست ناگا لینڈ نےعلیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے اپنا الگ وفاقی دارالحکومت بنالیا اورقومی ترانہ بھی جاری کردیا تھا،بھارتی میڈیا کے مطابق ناگا لینڈ حکومت نے کہا کہ ریاست اب ایک آزاد ملک ہے جس پر بھارت نے زبردستی قبضہ کر رکھا تھا اور ناگا لینڈ نے کبھی بھی بھارت کے ساتھ الحاق نہیں چاہا تھا۔

بھارت نے 1947 میں زبردستی ناگا لینڈ پر قبضہ کر لیا تھا۔ گزشتہ 71 سالوں کے دوران آزادی اور اپنے حقوق کی خاطر جدوجہد کرنے والے ریاست کے ہزاروں لوگوں کو دہشت گرد بھارتی فوجیوں کی جانب سے قتل کیا جا چکا ہےجبکہ ناگالینڈ کی خواتین کی عزتیں بھی تار تار کی گئیں۔

بھارت کی ہندو انتہا پسند حکمران جماعت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آئین کا آرٹیکل 370 راجیہ سبھا میں پیش کرنےسے قبل ہی صدارتی حکم نامے کے ذریعے ختم کر دیا تھا،مودی سرکار نے آرٹیکل 370 کو ختم کر کے مقبوضہ جموں و کشمیر اور لداخ کو دو حصوں میں تقسیم کر کے بھارتی یونین میں شامل کر لیا تھا جس کی بھارتی بعدازاں لوک سبھا نے بھی منظوری دیدی تھی،بی جے پی نے مقبوضہ کشمیر سے متعلق اپنے اقدام کے ردعمل کے خوف سے مقبوضہ وادی میں غیر معینہ مدت کے لیے کرفیو نافذ کر دیا تھا۔

مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 27 روز سے لاک ڈاؤن کے باعث عوام گھروں میں محصور اور حریت قیادت قید ہے، جگہ جگہ بھارتی فورسز کے ناکوں کے باعث مریضوں کو ادویات اور اسپتال جانے کی بھی اجازت نہیں ہے۔ اس کے علاوہ بھارتی فورسز اپنے حقوق کے لیے آواز بلند کرنے والے نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گنوں اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال بھی کر رہی ہیں۔

پاکستان، چین اور ترکی سمیت دنیا کے کئی ممالک نے بھارتی اقدامات کو ماننے سے انکار کرتے ہوئے مودی سرکار کو شدید تنقید کا نشانہ بھی بنایا،مودی سرکار کے فیصلے کو ناصرف دنیا بھر میں تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے بلکہ خود بھارت کے اندر سے بھی آرٹیکل 370 ختم کرنے کے فیصلے کو غیرآئینی قرار دیا جا رہا ہے،کانگریس کے رہنما راہول گاندھی نے پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ سری نگر ائیر پورٹ پہنچے تاہم انہیں ائیرپورٹ سے باہر جانے ہی اجازت نہیں دی گئی اور واپس نئی دہلی روانہ کر دیا گیا۔

 

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے