ایران کے فضائی دفاع کے قومی دن کے موقع پر نوجوان ایرانی ماہرین کے تیار کردہ جدید ترین سمارٹ ڈرون طیارے ‘کیان ‘کی رونمائی کی گئی، ایران کی ایئر ڈیفنس فورس کے کمانڈر بریگیڈیئر علی رضا صباحی فرد نے مذکورہ ڈرون طیارے کی رونمائی کی،اس موقع پر بریگیڈیئر جنرل صباحی فرد نے کہا کہ کیان کی شمولیت سے ڈرون بیسڈ ایئر ڈیفنس کی توانائی میں اضافہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کہ یہ ڈرون طیارہ بری فوج کے کمانڈر کی خصوصی ہدایت پر ملک کے نوجوان سائنسدانوں کی مشارکت سے ڈیزائن اور تیار کیا گیا ہے اور ایئرڈیفنس فورس کے جوانوں نے صرف ایک سال کی مدت میں یہ منصوبہ کامیابی کے ساتھ مکمل کیا ہے جو قابل ستائش ہے،کیان نامی جدید ترین ڈرون طیارہ حملے اور دفاع دونوں مقاصد کے لیے استعمال کیا جاسکے گا ، یہ طیارہ برق رفتاری کے ساتھ اہداف کی شناخت کی اور انہیں نشانہ بنانے کی توانائی رکھتا ہے اور مسلسل کئی گھنٹے کے تک کافی بلندی پر پرواز کرسکتا ہے،خیال رہے جدید ترین ڈرون کی رونمائی ایسے وقت میں کی گئی جب ایران اور امریکا کے درمیان کشیدگی عروج پر ہے۔

تاریخ اسلام میں کیان وہ ایرانی نژاد جنگجو بہادر تھے  جو واقعہ کربلا کے بعد قیام مختار کے دور میں اس زمانے کی سیکرٹ سروس کے سربراہ تھے اور دشمن کی ہر نقل و حرکت پر ان کی نگاہ شب و روز رہتی تھی، اس ڈرون کو کیان کے نام سے منسوب کرنے کے پیچھے شاید یہی حکمت ہے کہ ڈرون بھی دشمن کے حوالے سے تمام خبریں اور معلومات سے ایران افواج کو آگاہ رکھے گا۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے