یہ مطالبہ ہے پاکستان کرکٹ کے سابق نامور آل راونڈر وسیم اکرم کی آسٹریلوی اہیلہ شنیرا کا جو 4 سال سے کراچی میں مقیم ہیں اور روزانہ ساحل سمندر پر واک کرنے نکلتی ہیں، اور ہر روز سی ویو کی بگڑتی حالت، کچرے ، تعفن اور بیماریاں پھیلانے والے اجزاء کو دیکھ کر خون کے آنسو پیتی رہتی ہییں لیکن ان کی برداشت کی حد اس وقت ختم ہوگئی جب شنیرا اکرم نے ساحل سمندر پر کراچی کے اسپتالوں کا خطرناک فضلہ، خون آلود سرنجز، روئی اور دیگر چیزیں دیکھیں جو ہیپاٹائٹس، ایڈز اور دیگر موذی امراض پھیلانے کا باعث بن سکتے ہیں۔

شنیرا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پے در پے اپنے پیغامات میں کہا کہ اب خاموش نہیں رہا جاتا حکومت و انتطامیہ کو چاہیئے کہ وہ سی ویو کو عم لوگوں کیلئے بند کرے اسے مکمل صاف کیا جائے اور پھر لوگوں کیلئے کھولا جائے،شنیرا اکرم نے ٹوئٹر پر چند تصاویر شیئر کیں جن میں دیکھا جا سکتا ہے کہ سی ویو پر بڑی تعداد میں استعمال شدہ سرنجیں اور اسپتال کا فضلہ بکھرا پڑا ہے۔

پوسٹ شیئر کرکے شنیرا اکرم نے سب کو آگاہ کیا کہ ساحل کلفٹن پر یہ فضلہ خطرناک حدیں پار کرچکا ہے لہٰذا اسے فوری طور پر بند کردیا جائے،شنیرا اکرم نے ٹوئٹر پوسٹ میں لکھا کہ سی ویو  ساحل پر مت جائیں اسے صاف کرنے کی کوشش کریں، یہ انتہائی خطرناک فضلہ ہے اس علاقے پر پابندی عائد کی جائے اور اسے انتظامیہ سے صاف کرایا جائے،شنیرا اکرم نے مزید لکھا کہ ضرورت ہے کہ فوری طور پر سب کو بتادیا جائے کہ ساحل سمند غیر محفوظ ہے۔

شنیرا اکرم نے غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسا لگتا ہے جیسے اسپتال میں جن چیزوں سے خوف آتا ہے وہ سب ہمارے ساحل سمندر پر دھوئی جاتی ہیں، اسے روکنا ہوگا۔ علاوہ ازیں انہوں نے کہا میں طویل عرصے سے خاموش تھی تاہم اب ضروری ہے کہ اس مسئلے کو ہر ٹی وی چینل پر اٹھایا جائے کیونکہ کراچی کلفٹن بیچ سب کے لیے غیرمحفوظ ہوچکا ہے۔

شنیرا اکرم کی ایک ٹوئٹ پر شفقت حسین نامی صارف نے تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ ‘یہ خطرناک آپ کے لیے ہوگا لیکن ہم پاکستانی قوم ہیں ہم پیدا ہی غیر قدرتی موت مرنے کے لیے ہوئے ہیں،ایسے میں شنیرا اکرم نے صارف کو جواب دیتے ہوئے لکھا کہ آپ کس ذہنیت کے مالک ہیں؟ کبھی نہ بھولیں آپ کی زندگی اتنی ہی اہم ہے جتنی اس دنیا پر کسی اور کی ہے۔

شہر کراچی ان دنوں ویسے ہی کراچی سے کچراچی بنا ہوا ہے پورے شہر میں کچرے کے جا بجا ڈھیر عوام کی پریشانی کا باعث بنے ہوئے ہیں اوپر سے باران رحمت نے شہر کی نکاسی آب کا پول کھولتے ہوئے گلیوں سڑکوں کو تالاب میں تبدیل کردیا ہے ایسے میں شہر کی واحد تفریح گاہ سی ویو کا ساحل بچا ہے جسے پہلے ہی صفائی کے ناقص انتظامات کا سامنا تھا رہی سہی کثر اسپتال کے اس خطرناک فضلے نے پوری کردی، اور افسوس کی بات ہے کہ کسی حکومتی عہدیدار یا انتطامیہ کی نظر اس پر نہیں پڑ سکی ہے، وسیم اکرم کی اہلیہ نے توجہ تو دلائی ہے دیکھتے ہیں اس پر کیا ردعمل سامنے آتا ہے۔

 

 

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے