پاکستان کے تقریباً تمام چھوٹے بڑے شہروں بشمول کراچی، حیدرآبد، سکھر نوابشاہ، خیرپور، لاڑکانہ، لاہور، ملتان، گجرانوالہ، فیصل آباد، راولپنڈی، اسلام آباد، پشاور، نوشہرہ، ایبٹ آباد، مظفرآباد، کوئٹہ، چمن سمیت دیگر شہروں میں 8 محرم کے جلوس برآمد کیئے گئے، جس میں عزاداران امام حسین نے نوحہ خوانی، سینہ زنی، زنجیر زنی کرتے ہوئے جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کو ان کے مظلوم لال کا پرسہ دیا۔ 8 محرم خصوصی طور پر لشکر حسینی کے علمدار حضرت عباس علیہ السلام سے منسوب کیا جاتا ہے اس حوالے سے عزادارن حسین نے گھروں اور امام بارگاہوں میں خصوصی نیاز کا اہتمام کیا جبکہ بچوں کو سقائے سکینہ کے عنوان سے سقہ بنایا گیا۔

کراچی میں 8 محرم الحرام کامرکزی جلوس دوپہر تقریبا 1 بجے نشترپارک سولجر بازار سے برآمد ہوا، جو محفل شاہ خراسان سے ہوتا ہوا پیپلز چورنگی اور نیو پریڈی اسٹریٹ سے گزر کر تقریباً دوپہر تین بج کر دس منٹ پر ساؤتھ زون میں صدر دوا خانہ سے داخل ہوا، بعد ازاں جلوس ریگل چوک ،تبت سینٹر،جامع کلاتھ سے ہوتا ہوا تقریباً 5 بجے بارہ اامام بارگاہ میں داخل ہوا جہاں مجلس عزا کے بعد دوبارہ 6 بجے جلوس برآمد ہوکر رات 9 بجے حسینیہ امام بارگاہ کھارادر میں ختم ہوا۔

جلوس میں شبیہہ علم، تاابوت، ذوالجناح، جھولا اور دیگر زیارات شامل تھیں جبکہ عزادارن امام حسین نے سارے راستے نوحہ خوانی، زنجیر زنی و سینہ کوبی کرتے ہوئے امام عالی مقام سے اپنی محبت و عقیدت کا اظہار کیا۔

دوسری جانب ساؤتھ زون پولیس نے جلوس کی سیکیورٹی کےسخت انتظامات کیے تھے, جلوس کی سیکیورٹی پر 5577 افسران و اہلکار تعینات کیے گئے تھے، 104 کیمروں سے جلوس کی مانیٹرنگ کی گئی۔۔

9 محرم جلوس کے انتظامات

ملک بھر میں 9 محرم کو بھی جلوسوں کا سلسلہ جاری رہے گا اور کئی شہروں میں 9 محرم کی صبھ برآمد ہونے والا جلوس یوومم عاشور کو مرکزی جلوس کے ساتھ شامل ہوگا کراچی میں حسب سابق 9 محرم کا مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہو گا، جلوس سے قبل نشتر پارک میں مرکزی مجلس برپا ہو گی جس میں سید الشہداء حضرت امام حسین علیہ السلام  اور شہیدان کربلا کی سیر ت و کردار پر روشنی ڈالی جائے گی ۔ جسکے بعد شبیہ ذوالجناح، علم اور تازیوں کا جلوس برآمد ہو گا ، جلوس کے شرکاء مزار قائد کے وی آئی پی گیٹ نزد پیپلز چوورنگی پر نماز ظہرین ادا کریں گے، عزادار نوحہ خوانی اور سینہ کوبی کر تے ہوئے روایتی راستوں سے گزریں گے، جلوس ایم اے جناح روڈ، صدر ایمپریس مارکیٹ ، ریڈیو پاکستان اور کھارادر سے ہوتا ہوا امام بارگاہ حسینیہ ایرانیاں پر اختتام پذیر ہوگا۔ جلوس کے راستوں پر عزاداران کی سہولت کے لئے کھانے پینے کے انتظام کے ساتھ ساتھ شربت اور پانی کی سبیلیں بھی لگائی جائیں گی ۔

مرکزی جلوس کے راستوں اور اطراف میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔جلوس کے روٹ پر آنے والی تمام سڑکوں اور گلیوں کو کنٹینرز اور قناتیں لگا کر سیل کر دیا گیا ہے ۔ جلوس کی سیکیورٹی پر 7 ہزار سے ذائد پولیس اور رینجرز کے جوان تعینات ہوں گے ،  جلوس کی گزر گاہوں کی سوئیپنگ بھی کی جائے گی ، جلوس کی فضائی نگرانی کے ساتھ ساتھ سی سی ٹی وی کیمروں کے زریعے مانیٹرنگ بھی کی جائے گی ۔ بلند عمارتوں پر بھی سیکیورٹی اہلکار تعینات ہوں گے ،، شہر میں موٹر سائیکل پر ڈبل سواری بھی پابندی عائد ہے جبکہ جلوس کے روٹ پر موبائیل فون سروس بھی معطل رہے گی۔

موبائل فون سروس

سندھ حکومت نے 9محرم کوصوبےبھرمیں موبائل سروس مکمل طور پربندنہ کرنےکافیصلہ کیا ہےاس ضمن میں محکمہ داخلہ کی جانب سے جاری مراسلے میں کہا گیا ہے کہ صوبے میں صرف مرکزی جلوسوں کے راستوں پر جزوی طور پر موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس جزوی طور پر بند کی جاائے گی، اس حوالے سے متعلقہ زونز اور اضلاع کے ڈی آئی جیز، کمشنرزموبائل سروس بند کرنےکےاوقات اورعلاقوں کاتعین کرینگے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے