انڈونیشیا کے جنگلات میں لگی آگ سے اٹھنے والا دھواں ملائیشیا اور سنگاپور تک پہنچ گیا ہے، جس نے پوری فضا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے،انڈونیشیا کے جنگلات میں آگ لگنے سے قریبی ملکوں میں فضائی آلودگی کا سامنا ہے۔ملائیشیا کی تمام ریاستوں میں فضائی آلودگی کی سطح خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے۔

مضر صحت ہوا سے بچنے کے لیے ملائیشین حکام نے شہریوں میں 50 لاکھ ماسک تقسیم کیے ہیں۔اس کے علاوہ ملائیشیا نے دھواں پڑوسی ملکوں تک آنے سے روکنے کے لیے انڈونیشیا سے فوری کوئی اقدام کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔حالیہ ہفتوں میں انڈونیشیا کے سماٹرا اور کلی منتن ریجن کے جنگلات میں آگ لگی تھی،جس کے باعث 2.3 ملین ایکڑ اراضی جل کر راکھ ہوگئی تھی،میڈیا رپورٹس کے مطابق جنگلات میں آگ کسانوں کی جانب سے فصلوں کی باقیات جلانے کے باعث لگی تھی۔

اطلاعات کے مطابق جنگل ميں لگنے والی آگ بے قابو ہوگئی، جکارتہ حکومت نے بين الاقوامی برادری سے مدد طلب کی اپیل کردی۔انڈونيشین دارالحکومت جکارتہ کے قریب جنگلات میں لگی آگ بجھانے کيلئے کوششیں جاری ہیں تاہم مقامی انتظامیہ بدستور تیزی سے پھیلنے والی آگ کے سامنے بے بس نظر آرہی ہے، اب تک فائر فائٹرز کو کوئی خاطر خواہ کامیابی حاصل نہ ہوسکی انتہائی کوششوں کے باوجود شعلے بجھ نہ سکے تو انڈونیشین حکومت نے مدد کیلئے عالمی برادری سے اپيل بھی کررکھی ہے، شدید آگ سے اٹھنے والے دھويں کے باعث جکارتہ شہر کے اسکول بند ہیں جبکہ بين الااقوامی پروازوں کی آمد و رفت بھی معطل ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے