چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اعلان کیا ہے کہ اب ہم اس غیر جمہوری حکومت کو چلنے نہیں دیں گے,حیدرآباد میں پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ کل وفاقی وزیر قانون نے کراچی پر قبضے کا پلان پیش کیا، اگر کراچی پر غیر آئینی قبضے کی کوشش کی گئی تو حکومت کو گھر جانا پڑے گا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کسی بھی صورت میں سندھ کے خلاف سازش کامیاب نہیں ہونے دے گی، یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ غیر آئینی طریقے سے کراچی کو اسلام آباد سے کنٹرول کیا جائے۔انہوں نے حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ملک چلانا کوئی میچ نہیں ہے، ایسی ہی حرکتوں کی وجہ سے ماضی میں ملک ٹوٹا تھا

بلاول بھٹو نے کہا کہ آمر اٹھارویں ترمیم پر حملہ کرتے آ رہے ہیں لیکن ہم نے اٹھارویں ترمیم کے ذریعے 1973 کے اصل آئین کو بحال کرایا، آمروں سے لڑ کر، قربانیاں دے کر آئین بحال کیا اور ہمارے وزیراعظم سندھ میں آ کر کہتے ہیں کہ وفاق 18 ویں ترمیم کی وجہ سے دیوالیہ ہو رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ سندھ کوتباہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، کراچی پر قبضے کا مذاق کیا جا رہا ہے لیکن پیپلز پارٹی کٹھ پتلی اور غیر جمہوری طاقتوں کے سامنے دیوار کی طرح کھڑی ہو گی، کسی صورت سندھ کے وسائل پر قبضہ نہیں ہونے دیں گے۔

 وزیراعظم کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان نے ملک میں لوگوں کو سیاسی قیدی بنا کر رکھ دیا ہے، کٹھ پتلی حکومت کا ظلم جاری ہے، عوام کے حقوق چھینے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ اور کٹھ پتلی کا کام عوام کو خوش رکھنا نہیں ہوتا، کٹھ پتلی عوام کے ووٹ سے نہیں آتے اس لیے عوام پر مہنگائی کا بوجھ ڈالتے ہیں۔

 بلاول بھٹو نے کہا کہ جب آصف زرداری کی حکومت آئی تو پاکستان دہشت گردی کا شکار تھا، مشکلات کے باوجود آصف زرداری نے ملک کو سنبھالا۔انہوں نے کہا کہ معاشی مشکلات کے باوجود آصف زرداری نے تنخواہیں اور پنشن بڑھائی، آصف زرداری نے مشکل حالات میں بھی غریب عوام کو ریلیف دیا۔

 

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے