امریکی حکومت نے اعلان کیا کہ ایران کے وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف صرف اس شرط پر اسپتال جاکے اقوام متحدہ کے لئے مستقل ایرانی مندوب مجید تخت روانچی کی عیادت کرسکتے ہیں کہ ایران میں ایک امریکی قیدی کو جیل سےرہا کیا جائے ۔اقوام متحدہ کے لئے ایران کے مستقل مندوب مجید روانچی کو اقوام متحدہ کی حدود سے باہر نیویارک کے ایک اسپتال میں علاج کے لئے داخل کرایا گیا ہے، اس عمل پر ایران کا کہنا ہے کہ امریکا کا رویہ بالکل غیر انسانی اور سفارتی آداب کی خلاف ورزی ہے۔

وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف ان کی عیادت کے لئے اسپتال جانا چاہتےتھےلیکن امریکی حکومت نےاقوام متحدہ کے منشور،بین الاقوامی قوانین اور انسانی اقدارکو پامال کرتے ہوئے،انہیں اپنے نمائندے کی عیادت کے لئے اسپتال جانے کی اجازت نہیں دی اور اس کے لئے وعجیب اور غیر اصولی شرط پیش کی ۔

ایران کے نائب وزیر خارجہ سید عباس عراقچی نے امریکی حکومت کے اس اقدام کو خلاف قانون قرار دیتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ۔انھوں نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل مندوب مجید تخت روانچی صحتیاب ہوجائیں گے لیکن امریکا کی یہ شرمناک شرط، اس کی رسوائی کا سبب بنے گی اور ایک بدنما داغ کی حیثیت سے تاریخ میں باقی رہے گی ۔

امریکی حکومت کے ترجمان کا اس ضمن میں کہنا تھا کہ ایران نے متعدد امریکی شہریوں کو کئی سالوں سے غیر منصفانہ طور پر قید کر رکھا ہے، ہم نے ایرانی مشن پر واضح کردیا ہے کہ ایران کسی ایک امریکی شہری کو رہا کر دے تو ایرانی مشن پر سے سفری پابندیاں ختم کردی جائیں گی۔

اطلاعات کے مطابق ایران کی حراست میں 4 امریکی شہری موجود ہیں جنہیں ایران نے مبینہ طور ملکی قوانین کی خلاف ورزی کے الزام میں قید کیا ہوا ہے۔امریکی صدر حسن روحانی کا کہنا ہے کہ ایران نے جون میں لبنانی نژاد امریکی شہری کو رہا کیا تھا، اس کے بعد اب امریکا کی باری ہے کہ وہ کسی ایرانی شہری کو رہا کرے۔

امریکی حکومت نے نیویارک میں ایرانی وفد کی نقل وحرکت کیلئے بھی حدود کا اعلان کیا تھا ۔امریکی حکومت کے صادر کردہ احکام کے مطابق ایرانی وفد کےارکان صرف اقوام متحدہ کی حدود میں ہی رہ سکتے ہیں اوراقوام متحدہ کے ہیڈکواٹر اورنیویارک کے جان ایف کنیڈی ہوائی اڈے کے درمیان ہی رفت و آمد کرسکتے ہیں ۔امریکی حکومت نے اس سے پہلے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں شرکت کے لئے نیویارک جانے والے ایرانی وفد کے ارکان کو ویزا صادر کرنے میں بھی رکاوٹیں ڈالی تھیں ۔امریکا اقوام متحدہ کا ہیڈکوارٹر نیویارک میں ہونےسے ہمیشہ ناجائز اور غیر قانونی فائدہ اٹھانے کی کوشش کرتا ہے اور اقوام متحدہ کے اجلاسوں میں اپنے مخالفین کی شرکت کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرتا ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے