ترکی کے محکمہ آثار قدیمہ نے دعویٰ کیا ہے کہ انھیں ایک مقام پر کھدائی کے دوران 5 ہزار 700 برس پرانا ایک ڈھانچہ ملا ہے جو اندازاً 6 سے 7 برس کے بچے کا ہے

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق ترکی اور دیگر ممالک کے محکمہ آثار قدیمہ کے ماہرین مشرقی ملاطیہ صوبے میں واقع ارسلان تپہ میں کھدائی کررہے تھے کہ اس دوران یک مکان سے یہ ڈھانچہ دریافت ہوا۔ماہرین کے مطابق یہ ڈھانچہ انہیں جس مقام سے ملا وہ تانبے کا بنا ہوا گھر تھا جس کے بارے میں یہ امکان ہے کہ یہ مکان آخری عہد میں تعمیر کیا گیا۔

انقرہ اور تپہ یونیورسٹی کے پروفیسر مارسیل فرنگی کا کہنا تھا کہ ’’ہمیں بچے کے بازوؤں اور گردن سے موتی ملے، ایسا ڈھانچہ ہم نے پہلے کبھی نہیں دیکھا، اس بات ظاہر کرتی ہے کہ بچہ کسی معتبر گھرانے کا تھا‘‘۔پروفیسر کا کہنا تھا کہ یہ بچہ 3600 سے 3700 قبل مسیح کا ہے، ماہرین نے ڈھانچے کو انقرہ یونیورسٹی منتقل کردیا جہاں ڈھانچے پر مزید تحقیقات کی جائیں گی اور اس سے انسانوں کی زمین پر آبادی کے بارے میں کافی مدد ملے گی۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے