جاپان نے پاکستان کوان  ٹاپ 10 ممالک کی فہرست میں رکھا ہے  جہاں سے تربیت یافتہ افراد جاپان میں صنعتوں میں کام کرنے کے لیے بلائیں جائیں گے۔ جاپان نے یہ فیصلہ اپنی افرادی قوت کی قلت کو پورا کرنے کے لیے کیا ہے ۔

جاپانی سفیر مسٹر کونی نوری جٹسوڈا کا کہنا ہے کہ پاکستان کو ان 10 دوست ممالک کی فہرست میں شامل کر لیا ہے جہاں سے جاپان تربیت یافتہ افرادی قوت بلانے کو ترجیح دے گا ۔ یہ بات انہوں نے پاکستان جاپان بزنس فورم کے سالانہ اجلاس کہی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جاپان پاکستان کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کے لیے کوشاں ہے،  پاکستانی جاپان میں  آٹوموبائل کے علاوہ، فوڈ، ماہی گیری، لاجسٹکس، ٹرانسپورٹ میں کاروبار کر سکتے ہیں۔ جاپانی سفیر نے کہا کہ پاکستان کے ساتھ زراعت، فارماسوٹیکل ، انرجی،تعلیم اورروزگارکے شعبوں میں مزید کام کرنے کی ضرورت ہے ۔

واضح رہے کہ دنیا کے  تیسرے بڑے ترقی یافتہ ملک میں عمر رسیدہ افراد کی آبادی میں مستقل اضافہ ہورہا ہے ، جس کے نتیجے میں نوجوان افرادی قوت میں کمی نے صنعتوں میں مزدوروں کی قلت پیدا کر دی ہے ۔

جاپان نے مقامی  آبادی میں مسلسل کمی کے مسائل کو سامنے رکھتے ہوئے غیر ملکی ہنرمندوں  کے لیے اپنے دروازے کھول دیے ہیں اور ویزا قوانین میں نرمی کر دی ہے ۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے