خبررساں ادارے کے مطابق پاکستان میں تعینات چینی سفیر یاﺅ جنگ نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین نے چین نے پاکستان کے صوبے خیبرپختونخوا کے قبائلی علاقہ جات میں 58 یونیورسٹیاں اور 30 ہسپتال بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

چینی سفیر کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے آباﺅ اجدادکا تعلق ان علاقوں سے ہے جو آج پاکستان کے ۔ ان علاقوں میں امن اور استحکام کی ضرورت ہے تاکہ چینی حکومت اور چینی کمپنیاں ان علاقوں کو کوئٹہ، چمن، گوادر اور کابل سے جوڑ سکیں اور ان کا رابطہ ریلوے ٹریکس کے ذریعے آگے قازقستان تک سے منسلک کیا جا سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کا سی پیک منصوبے میں کلیدی کردار ہے اور ہم خیبرپختونخوا کے پسماندہ علاقوں کی ترقی میں حکومت کی ہر ممکن مدد کر رہے ہیں۔ اسی مقصد کے لیے چین قبائلی علاقوں میں 58 یونیورسٹیاں اور 30 ہسپتال بنانے جا رہا ہے۔

یاد رہے چند روز قبل چین نے پاکستان کی کھل کر حمایت کرتے ہوئے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ وہ پاکستان کو اے ایف ٹی ایف میں بلیک لسٹ نہیں ہونے دے گا۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے