پاکستان کے 13سالہ اسکریبل پلیئر عماد علی نے انگلینڈ میں ہونے والی ورلڈ اسکریبل چیمپئن شپ میں تاریخ رقم کر دی  اورماہر کھلاڑیوں کو مات دے کر فائنل میں پہنچ گئے۔ 

عماد علی ورلڈ اسکریبل کوارٹر فائنل میں پہنچنے والے نا صرف کم عمر کھلاڑی ہیں بلکہ پہلے پاکستانی کھلاڑی ہیں جنہوں نے ورلڈ اسکرایبل چیمپئن شپ کے مین ایونٹ کے کوارٹر فائنل تک رسائی حاصل کی۔

کوارٹر فائنل میں عماد علی کا مقابلہ دفاعی چیمپئن اور اسکریبل کے سب سے بہترین کھلاڑی 45 سال کے تجربہ کار نیوزی لینڈ کے نائجل رچرڈز سے ہو گا جو عماد علی سے عمر میں 32 سال بڑے ہیں۔

واضح رہے عماد علی نے عالمی چیمپئن شپ کے دوران 35 میں سے 21 مقابلے جیتے، انہوں نے ایونٹ میں دنیا کے کئی ٹاپ ٹین کھلاڑیوں کو بھی مات دی جن میں سابق عالمی چیمپئن انگلینڈ کے بریٹ سمیتھرام، آسٹریلیا کے سابق عالمی چیمپئن ڈیوڈ ایلڈر، ورلڈ ٹاپ کھلاڑی امریکا کے ڈیوڈ ویگانڈ، انگلینڈ کے ہارشن اور آئر لینڈ کے پال گالکین بھی شامل ہیں۔

عماد علی نے تین روز قبل جونئیر ورلڈ اسکریبل چیمپئن ہونے کا بھی اعزاز حاصل کیا تھا۔

عالمی اسکریبل چیمپئن شپ کے ساتھ رینکنگ میں کم درجے والے کھلاڑیوں کے درمیان بھی مقابلے جاری ہیں، ڈویژن بی میں بھی پاکستانی کھلاڑی چھائے رہے اور پانچ کھلاڑیوں نے کوارٹر فائنل میں جگہ بنالی ہے جن میں حماد ہادی، حسان ہادی، دانیال ثناءاللہ، طحہ مرزا اور مونس خان شامل ہیں۔

ورلڈ اسکرایبل چیمپئن شپ کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ کسی ایک ملک کے پانچ کھلاڑیوں نے کوارٹر فائنل میں جگہ بنائی ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے