سندھ میں صحت کے شعبے کی حالت دگرگوں ہے اسپتالوں میں سہولیات نہ ہونے کے برابر ہیں ، دارالامان میں داخل خاتون کو تین دن سے ادویات نہ ملیں۔ ادویات کی عدم دستیابی کے باعث جب خاتون کو دل میں تکلیف ہوئی تو وہاں ڈاکٹر کی عدم موجودگی کے سبب مریضہ کو اسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

ذرائع  کے مطابق 40 سالہ قابلاں خاتون کو دل کی تکلیف کے باعث جب دارالامان سے اسپتال منتقل کیا جانا ضروری ہوگیا تو ایمبولینس کی عدم دستیابی کے باعث پولیس موبائل میں بٹھا کر لے جایا گیا۔

اسپتال سے ذمہ دار ذرائع نے بتایا کہ سخت تکلیف میں مبتلا خاتون پہ مزید ستم اس طرح ڈھایا گیا کہ اسپتال میں اسٹریچر نہ ملا تو وہیل چیئر پہ بٹھا کر وارڈ میں منتقل کیا گیا۔

ذمہ دار ذرائع نے اس ضمن میں بتایا کہ دارالامان میں خاتون کو دل میں اس لیے تکلیف ہوئی کہ گزشتہ تین دن سے انہیں لازمی اور ضروری ادویات نہیں ملی تھیں۔

ذرائع کے مطابق  قابلاں خاتون کو تشویشناک حالت میں اسپتال کے شعبہ امراض قلب میں داخل کیا گیا ہے۔

سندھ میں گزشتہ دس سال سے پاکستان پیپلزپارٹی حکمران جماعت کے طور پر براجمان ہے اور18 ویں آئینی ترمیم کے بعد صحت خالصتاً صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے