سینئرتجزیہ کار زیدحامد کا کہناہے کہ عمران خان نےملائشیا سمٹ میں شرکت نہ کرنے پرترکی میں شدیدغم وغصہ پایاجاتاہے

تجزیہ کار زید حامد نے کہا ہےکہ میری اطلاعات کے مطابق ملائیشیا  میں ہونے والی اسلامی ممالک کی سمٹ میں شرکت نہ کرنے کے فیصلے پر ترکی  نے بھرپور ناراضگی کا اظہار کیا ہے ۔

زید حامد کے مطابق  ہم اسلامی ممالک کی سمٹ میں عدم شرکت سے ترکی کو ناراض کر بیٹھے تو یہ کشمیروں کے ساتھ خیانت ہوگی۔
واضح رہے ترکی نے کشمیر کے معاملے پر ہمیشہ پاکستان کا ساتھ دیا، دنیا کے ہر فورم پر جب بھی کشمیر کی بات ہوئی ترکی نے پاکستانی موقف کی حمایت کی۔
یاد رہے چند ماہ قبل اقوام متحد ہ میں ترک صدر طیب اردگان نے بھی کشمیر پر بھارتی مظالم کیخلاف آواز اٹھائی تھی۔ یاد رہے وزیراعظم عمران خان نے ملائشیاء میں ہونے والی اسلامی ممالک کی سمٹ میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس پر کہا جا رہا ہے کہ فیصلہ سعودی عرب کی خواہش پر کیا گیا۔
تاہم ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد اور سعودی شاہ سلمان کے مابین ٹیلیفونک رابطہ بھی ہوا ۔ وزیراعظم مہاتیر محمد نے سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو فون کر کے کوالالمپور میں ہونے والے سربراہی اجلاس کے حوالے سے اعتماد میں لیا۔
ملائیشیا کے وزیراعظم نے اپنے موقف کو دہراتے ہوئے کہا کہ کوالالمپور اجلاس او آئی سی کی جگہ نہیں لے گا۔
صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ شاہ سلمان کے اس موقف سے اتفاق کرتا ہوں کہ امت مسلمہ کو درپیش مسائل کے حوالے سے او آئی سی کا اجلاس بلانا چاہئیے۔
مہا تیر محمد کا کہنا تھا کہ سعودی شاہ نے اُنہیں کوالالمپور سربراہی اجلاس میں شرکت نہ کرنے کی وجوہات سے آگاہ کیا۔
0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے