بالی ووڈ کی مشہور گلوکارہ انورادھا پوڈھوال آج کل خبروں کی زد میں ہیں  ۔ کرمالا ماڈیکس نام کی کیرالہ کی ایک خاتون نے انورادھا کی حقیقی بیٹی ہونے کا  دعوی کیا ہے ۔

انورادھا پوڈھوال کو اپنی ماں بتانے والی اس خاتون کرمالا ماڈیکس نے ترووننت پورم کی فیملی عدالت میں 67 سال کی گلوکارہ کے خلاف کیس درج کرکے 50 کروڑ روپے کے ہرجانہ کا مطالبہ کیا ہے ۔ خبر ایجنسی کی ایک رپورٹ کے مطابق کرمالا کا کہنا ہے کہ اس کی پیدائش 1974 میں ہوئی تھی ۔ جب وہ چار دن کی تھیں ، تبھی انورادھا پوڈھوال نے انہیں پونناچن اور اگنیس نام کے جوڑے کو سونپ دیا تھا ۔ یہ دونوں ہی ان کے قریبی دوست تھے ۔ انورادھا پوڈوال کی اس مبینہ بیٹی کی کئی تصویریں بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہیں ۔ انڈین ایکسپریس نے بھی کرمالا کے وکیل سے بات چیت کے بعد ان کے ذریعہ بھیجی گئی تصویر کو شیئر کیا ہے ۔

خاتون کے مطابق اس دوران انورادھا اپنا کیریئر بنانے میں مصروف تھیں اور اس کی وجہ سے وہ بچے کی ذمہ دار نہیں لینا چاہتی تھیں ۔ کرمالا نے بتایا کہ میری پرورش کرنے والے باپ پونناچن نے انورادھا پوڈوال کے بارے میں اس وقت سچائی بتائی جب اس کا باپ بستر مرگ پر تھا ۔ وہیں کرمالا کے مطابق ان کی پرورش کرنے والی ماں الزائمر بیماری میں مبتلا ہے ۔ کرمالا خود تین بچوں کی ماں ہیں ۔

کرمالا نے یہ بھی بتایا کہ والد سے سچائی جاننے کے بعد اس نے کئی مرتبہ انورادھا سے فون پر رابطہ کرنے کی کوشش کی ، لیکن انہوں نے بات نہیں کی ۔ کرمالا کے وکیل کا کہنا ہے کہ انہیں اس زندگی سے محروم رکھا گیا ، جس کی وہ حقدار تھیں ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ انورادھا کے ذریعہ دعوی خارج کئے جانے پر عدالت سے ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا بھی مطالبہ کیا جائے گا۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے