شیخوپورہ کی خان پورنہر پر جواں سالہ لڑکی کےقتل کا معمہ حل ہوگیا، پولیس کے مطابق 22 سالہ مقتولہ مہوش لاہورکے علاقے ساندہ کی رہنے والی تھی جسے اس کے والد نے غیرت کے نام پر قتل کیا اور لاش گڑھے میں پھینک دی۔

پولیس کے مطابق دو جنوری کو شیخوپورہ کی خان پو ر نہر پر ایک گڑھے سے نامعلوم لڑکی کی لاش ملی تھی، جس کی بائیو میٹرک طریقے سے شناخت کی گئی۔

مقتولہ کے والد اختر سے پوچھ گچھ کی گئی تو اُس نے جرم کا اعتراف کرلیا۔

ملزم نے بتایا کہ اسے مہوش کے کردار پر شک تھا، اس نے اپنے ملازم حیدر علی کی مدد سے مہوش کو خان پور نہر پر لے جاکر قتل کر دیا اور لاش کو گڑھے میں پھینک دیا۔

واردات کےبعد ملزم نے لڑکی کے گم ہونے کی جھوٹی رپورٹ تھانہ شاہدرہ میں درج کرائی تھی۔

ملزمان سے آلہ قتل برآمد کر لیا گیا ہے، اُنہیں کل مقامی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے