متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے آئی ٹی خالد مقبول صدیقی کی جانب سے وزارت چھوڑنے کے اعلان کے بعد وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے وزیر قانون فروغ نسیم سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور موجودہ سیاسی صورتحال پر بات چیت کی۔

فیصل واوڈا نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان وزیراعظم عمران خان کی سوچ کی عکاسی کے عین مطابق سیاسی جماعت ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اور ہم ایم کیو ایم سمیت اتحادیوں کو بھائی سمجھتے ہیں۔

انہوں نے عزم کا اظہار کیا کہ ایم کیو ایم پاکستان کو وفاقی حکومت سے الگ نہیں ہونے دیں گے۔

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ فروغ نسیم کو باہمی مشاورت سے تمام مسائل کے حل کی یقین دہانی کرائی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت اور ایم کیو ایم کا باہمی تعاون جاری رہے گا۔

اس سے قبل خالد مقبول صدیقی نے ان کی جماعت سے کیے جانے والے وعدے پورے نہ کرنے پر وفاقی حکومت سے الگ ہونے کا اعلان کیا تھا۔

کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وعدہ کیا تھا کہ حکومت بنانے سمیت ہر مشکل میں ساتھ دیں گے اور ہم نے اپنا وعدہ نبھایا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا خیال تھا کہ ایم کیو ایم حکومت کا حصہ ہو گی تو اس کا اچھا تاثر کراچی کے شہریوں پر ہو گا تاہم اب وزارت میں بیٹھنا بہت سارے سوالوں  کو جنم دے رہا ہے۔

انہوں نے وزارت چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ میرا اب کابینہ میں بیٹھنا بے سود ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے