خبیر پختونخواہ کے شہر مردان کے نواحی علاقے گراگول میں گورنمنٹ پرائمری اسکول کے استاد کو تحریک طالبان افغانستان کے مبینہ حامیوں کی طرف سے قتل کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

پرائمری اسکول ٹیچر توقیر ابشر کے مطابق ان کے گاؤں کی مسجد میں افغان امارت اسلامی طالبان کا ایک رکن آیا اور اس نے گزشتہ جمعہ کو خطبہ بھی دیا اور اسی خطبہ کے دوران اس طالبان رکن نے افغانستان میں جہاد میں شرکت کرنے اور افغان جہاد کے لیے چندہ دینے کی اپیل بھی کی۔

توقیر ابشر کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس افغان طالب کو چندہ جمع کرنے سے روکا کیونکہ افغانستان میں جہاد نہیں بلکہ خانہ جنگی ہورہی ہے- جس کے بعد سے مجھے اور گھر والوں کو قتل کی دھمکیاں مل رہی ہیں-

واضح رہے کہ توقیر ابشر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بھی اس واقع کی خبر دی ہے اور کہا ہے کہ ان کی کسی کے ساتھ کوئی دشمنی نہیں ہے-

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے