کراچی کے علاقے گلشن اقبال سے خاتون کی 12 سال پرانی لاش برآمد ہوئی تھی جسے 12 سال سے فریزر میں رکھا گیا تھا۔ لاش ملنے کے بعد پولیس نے فلیٹ کا تالہ توڑ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلشن اقبال بلاک 11 سے خاتون کی 12 سال پرانی لاش برآمد ہوئی تھی، ایس پی گلشن اور دیگر افسران نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا، پولیس کے مطابق فلیٹ سے پلاسٹک سے بھری بوریوں کی بڑی تعداد ملی ہے، فرانزک ٹیم نے تمام کمروں کا جائزہ لیا اور شواہد اکٹھے   کیے۔

خاتون کے بیٹے اور بیٹی نے “محبت” میں ماں کی لاش کو دفنانے کی بہ جائے 12 سال تک اس کو فریزر میں رکھا تھا۔ پولیس کا کہنا تھا کہ جب ذکیہ کا بیٹا اور بیٹی بھی فوت ہوئے تو ان کے بھائی محبوب نے لاش کی دیکھ بھال شروع کی، گزشتہ رات محبوب نے ان کا ڈھانچا نکال کر کچرا کنڈی میں پھینک دیا تھا، محبوب کا کہنا تھا کہ بیٹے اور بیٹی نے ماں کو محبت میں سنبھال کر رکھا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون زکیہ گورنمنٹ اسکول ٹیچر تھیں، علاقہ مکینوں کے مطابق بہن بھائیوں کی حرکات مشکوک تھیں۔ پولیس کے مطابق خاتون زکیہ کے بیٹےقیصر نے خودکشی کی تھی اور کچھ عرصہ پہلے مقتولہ کی بیٹی شگفتہ کی موت ہوگئی تھی۔

خاتون کے بھائی نے اپنے ابتدائی بیان میں کہا کہ، وہ 2 دن پہلے بہن کے گھر گیا تو دیکھا کہ بہن کی لاش بستر پر پڑی ہے، ذکیہ کا ذہنی توازن بھی ٹھیک نہیں تھا۔ جب کہ پولیس نے لاش کا پوسٹ مارٹم کرالیا ہے، اور محبوب کو حراست میں لے کر تفتیش کی جا رہی ہے۔

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے