شفقنا اردو: ڈیرہ غازی خان میں قائم قرنطینہ مرکز میں تمام زائرین کو بھیڑ بکریوں کی طرح ایک محدود جگہ پر محدود کر دیا گیا ۔صحت مند اور متاثرہ لوگوں کو الگ الگ کرنے کی بجائے سب کو ایک ہی جگہ جمع کر دیا گیا ہے تاکہ جنہیں وائرس نے ابھی تک نشانہ نہیں بنایا وہ بھی شکار بن جائیں ۔

اتنے سارے صحت مند خواتین ،بچوں اور مردوں کو اتنے قریب دیکھ کر کرونا وائرس خوشی سے چھلانگیں لگا رہا ہے اور بلند آہنگ نعرے بھی لگا رہا ہے

“تم سب مرو گے”

وائرس کو خوش کرنے کیلئے اور اس بات کو یقینی بنانے کیلئے کہ کوئی بندہ متاثر ہوئے بغیر فرار نہ ہو جائے قرنطینہ مرکز کے باہر پہرے دار کھڑے کر دئے ہیں ۔

کچھ بھیڑ بکریوں کو یہ ضد ہے کہ وہ صحت مند ہیں انہیں مشتبہ متاثرہ لوگوں سے الگ کر دیا جائے کہ انہیں ابھی زندہ رہنا ہے ۔ حکام کا خیال ہے کہ کرونا وائرس کی سننی چاہئے کہ اسکی وجہ سے ڈالر ملیں گے ان مسافروں کی نہیں سننی چاہئے کہ اگر زندہ بچ کر نکل گئے تو پیسے کون دے گا ۔پاکستان زندہ آباد

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے