شفقنا اردو: پیپلز پارٹی کے پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر سید حسن مرتضیٰ نے کہا ہے کہ پنجاب میں سکھا شاہی نافذ کر دی گئی، کسانوں کے گھروں سے زبردستی گندم اٹھائی جا رہی ہے، وہ دانے جو کسان نے اپنے خوارک اور بیج کیلئے رکھے وہ بھی سرکار چھین رہی ہے۔

اپنے بیان میں حسن مرتضی نے کہا کہ محکمہ گندم کی خریداری کے نام پر کسانوں کے گھروں سے زبردستی گندم اٹھا رہا ہے، جہاں چند من گندم بھی دیکھتے ہیں وہاں لوٹ مار مچانے پہنچ جاتے ہیں، گندم کا بحران پیدا کر کے اب کسانوں پر حملہ آور ہے، جو صوبہ پورے ملک کو گندم اور خوارک فراہم کرتا تھا آج وہ خود خوراک کی قلت کا شکار ہے۔

حسن مرتضی نے کہا کہ پنجاب حکومت کی کسان دشمن پالیسیوں کی وجہ سے گندم خریداری کا ہدف پورا نہیں ہو رہا، نیازی اور بزدار نے اپنے مالی سہولت کاروں کو نوازنے کیلئے گندم کا بحران پیدا کیا، سبسڈی کسان کو دینے کے بجائے کرپٹ حکمران ٹولے نے اپنے دوستوں کو نوازا۔ ناقص زرعی پالیسی کی وجہ سے کسان کو کنگال کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اپنے مالی سہولت کاروں کو نوازنے کے بجائے کسان کو سبسڈی دی جاتی تو آج گندم وافر ہوتی، اب ہدف پورا نہیں ہو رہا تو کسانوں کی گھروں پر ڈاکے ڈالے جا رہے ہیں۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے