شفقنا اردو: ڈبلیو ایچ او کے سربراہ نے کہا کہ اس حوالے سے کوئی یقینی بات موجود نہیں کہ کرونا وائرس کے خلاف ویکسین تیار کر لی جائے گی، اور اگر ایسا ہوا بھی، تب بھی یہ اگلے سال سے قبل دستیاب نہیں ہوگی۔

ایسے وقت میں جب یورپ امریکا اور ایشیا میں لاک ڈاؤن میں نرمی کی جا رہی ہے تو کئی ملکوں میں کرونا وائرس کے متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے اور یہ اضافہ تیز ترین طور پر ہو رہا ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے اس حوالے سے تشویش کا اظہار کیا ہے اور کئی ممالک پہلے ہی پابندیاں دوبارہ نافذ کر چکے ہیں۔ ڈبلیو ایچ او کے سربراہ نے کہا ہے کہ رواں ہفتے کرونا وائرس کے متاثرین کی تعداد ممکنہ طور پر ایک کروڑ سے تجاوز کر جائے گی۔

عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر برائے یورپ نے کہا ہے کہ کئی ماہ میں پہلی بار یورپ میں کرونا وائرس ’بہت نمایاں طور پر سر اٹھا رہا ہے۔

 

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے