اقوام متحدہ نے عراق میں امریکی ڈرون حملے میں ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کا قتل غیر قانونی قرار دے دیا۔

اقوام متحدہ کے نمائندہ خصوصی برائے ماورائے عدالت قتل اگنیس کیلامارڈ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ امریکا ایسا کوئی بھی ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا جس سے ثابت ہوتا ہو کہ جنرل سلیمانی کی جانب سے امریکی مفادات پر کسی حملے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی۔

انہوں نے کہا کہ اس بنیاد پر امریکا کی جانب سے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی پر کیا جانے والا حملہ بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی تھا۔

دوسری جانب امریکا نے عالمی ادارے کی رپورٹ کو بد دیانتی پر مبنی قرار دے دیا۔

ترجمان امریکی محکمہ خا رجہ کا کہنا ہے کہ اقوام متحدہ نے اپنی رپورٹ میں جنرل قاسم سلیمانی کا ریکارڈ بھی دھو کر صاف کر دیا۔

خیال رہے کہ رواں برس جنوری میں بغداد ائیرپورٹ کے نزدیک امریکی ڈرون حملے میں ایرانی فوج کی القدس بریگیڈ کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی ساتھیوں کے ہمراہ مارے گئے تھے۔

منبع: جیو نیوز

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے