اسلام آباد: پارلیمنٹ کے دونوں ایوان تقریباً دو ماہ تک اجلاس میں رہتے ہوئے ایک مصروف ترین شیڈول مکمل کرنے کے بعد اب آئندہ روز سے ایک اور مصروف ترین ہفتے کا آغاز کریں گے جہاں کشمیر اور ایف اے ٹی ایف سے متعلق قانون سازی کی جائے گی۔

 جہاں قومی اسمبلی کا اجلاس 7 اگست کو دوبارہ شروع ہونا ہے اور سینیٹ کا اجلاس کل (بدھ) کو ہورہا ہے، صدر عارف علوی نے پیر کے روز پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس طلب کیا ہے جس کے دوران ایک درجن کے قریب قانون سازی کی ضرورت ہے جن میں دہشت گردی کے خلاف فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی چند شرائط کو پورا کرنے کے لیے ضروری قانون سازی بھی شامل ہے اور وہ بل جو ایک ایوان سے منظور ہوچکے ہیں اور اب انہیں دوسرے ایوان سے 90 روز کے اندر منظور ہونے ہیں۔

 وزیر اعظم کے مشیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا کہ مشترکہ اجلاس کی بنیادی توجہ ایف اے ٹی ایف سے متعلق بلز اور قومی اہمیت کے حامل چند دیگر قوانین کی منظوری پر مرکوز ہوگی۔

منبع: ڈان نیوز

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے