اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے جانوروں کی منتقلی سے متعلق کیس میں ریمارکس دیے ہیں کہ جو لوگ جانوروں کی ہلاکت کے ذمہ دار ہیں وہی تحقیقات کررہے ہیں، ہر کوئی سیاست کر رہا ہے، جانوروں کے تحفظ کی ذمہ داری کوئی نہیں لینا چاہتا۔

ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے مذکورہ کیس کی سماعت کی جس کے دوران وزارت موسمیاتی تبدیلی کے نمائندے عدالت میں پیش ہوئے۔

سماعت میں چیف جسٹس نے کہا کہ عدالت نے دیکھا ہے کہ ہر ادارہ چڑیا گھر کو کنٹرول کرنا چاہتا ہے، ہر ادارہ اس معاملے کا کریڈٹ لینا چاہتا ہے لیکن جانوروں کے تحفظ کی ذمہ داری کوئی نہیں لینا چاہتا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ ایک سال سماعت کے دوران عدالت نے محسوس کیا ہے کہ ہر کوئی سیاست کر رہا ہے، وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ کا ایک ایک رکن اس کا ذمہ دار ہے۔

منبع: ڈان نیوز

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے