پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اورپاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) میں ملتان سلطانز کی رہنمائی کرنے والے شاہد آفریدی نے رواں سیزن میں مداحوں کو مایوس نہ کرنے کا عزم کرتے ہوئے کہا ہے کہ لیگ میں باؤلنگ کا معیار بہترین ہے۔

 شاہد آفریدی نے کہا کہ پی ایس ایل میں باؤلنگ کا اعلیٰ معیار ہے اور ایسے باؤلنگ کا سامنا دنیا کی کسی اور لیگ میں نہیں ہوتا۔

انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل ملک کی پہچان ہے اور اب ایک برانڈ بن چکا ہے اور ہم سب کی ذمہ داری ہے اس کو کامیاب بنائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ لیگ کے نئے سیزن کے لیے پرجوش ہوں اورکرکٹر ہو یا مداح سب پی ایس ایل کے منتظر ہیں اور رواں برس تمام ٹیمیں مضبوط ہیں اور مداحوں کو اچھا مقابلہ دیکھنے کو ملے گا۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ پاکستان کو لیگ کی وجہ بڑے باصلاحیت کھلاڑی ملے ہیں اور نوجوان کھلاڑیوں کے لیے اچھا موقع ہے کہ اچھا کھیل پیش کرکے اپنے کیریئر کو آگے بڑھائیں۔

سابق کپتان نے کہا کہ میں بھی پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن کا منتظر ہوں اور اپنے مداحوں کو مایوس نہیں کروں گا۔

خیال رہے کہ شاہد آفریدی 20 فروری سے شروع ہونے والے پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن میں بھی ملتان سلطانز کی نمائندگی کریں گے۔

ملتان سلطانز نے لیگ کے چھٹے ایڈیشن کے لیے قومی ٹیم کے نائب کپتان اور وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان کو کپتان مقرر کردیا ہے۔

گزشتہ ایڈیشن میں کراچی کنگز کی نمائندگی کرنے والے محمد رضوان کی خدمات اس سیزن میں ملتان سلطانز نے حاصل کیں اور ان کی پاکستان ٹیم کے لیے عمدہ کارکردگی کو دیکھتے ہوئے انہیں سلطانز نے اپنی ٹیم کا کپتان مقرر کردیا ہے۔

پاکستان سپر لیگ کے چھٹے ایڈیشن کے میچز لاہور اور کراچی میں منعقد ہوں گے اور ایونٹ کا افتتاحی میچ 20 فروری دفاعی چیمپیئن کراچی کنگز اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے درمیان کھیلا جائے گا۔

ایونٹ کا فائنل 22 مارچ کو لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں ہو گا۔

پی ایس ایل 2021 کیلئے عالمی شہرت یافتہ کمنٹیٹرز کا اعلان

ڈینی موریسن کراچی میں شیڈول میچوں میں کمنٹری کریں گے—فوٹو: پی سی بی

پاکستان سپرلیگ (پی ایس ایل) 2021 کے لیے رمیز راجا، ڈینی موریسن سمیت عالمی شہرت یافتہ کمنٹیٹرز کے پینل کا اعلان کردیا گیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ‘پی ایس ایل 2021 کے لیے براڈکاسٹ پلان تیار کرلیا گیا ہے اور ایونٹ کے دوران معروف قومی اور بین الاقوامی کمنٹیٹرز میدان میں جاری کھیل پر رواں تبصرہ کریں گے’۔

پی سی بی کے مطابق ‘معروف انگلش کمنٹیٹر ایلن ولکنز، ڈومینک کارک، پاکستان کے سابق کرکٹرز رمیز راجا، بازید خان، ثنا میر، عروج ممتاز اور نیوزی لینڈ کےسابق کرکٹرسائمن ڈول لیگ کے چھٹے ایڈیشن کے دوران کمنٹری کے فرائض انجام دیں گے’۔

بیان میں کہا گیا کہ ‘ممتاز کمنٹیٹر طارق سعید اور سکندر بخت اردو زبان میں کمنٹری کریں گے’۔

پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن میں ‘نیوزی لینڈ کے مشہور کمنٹیٹر ڈینی موریسن اور انگلینڈ کے ڈیوڈ گاور صرف کراچی میں شیڈول میچوں کے لیے دستیاب ہیں جہاں 20 فروری کو شروع ہونے والی لیگ کے میچز7 مارچ تک جاری رہیں گی’۔

پی سی بی کا کہنا ہے کہ ’10مارچ سے 22 مارچ تک لاہور میں جنوبی افریقہ کے جے پی ڈومینی اور زمبابوے کے پومی ایمبینگوا بھی کمنٹری پینل میں شامل ہوں گے’۔

پی ایس ایل کی کوریج کے حوالے سے کہا گیا کہ ‘ایونٹ کی ایچ ڈی کوریج کے دوران 30 سے زائد کیمروں کے علاوہ سپر سلو اور آلٹرا موشن کیمروں سمیت اسپائیڈر کیم، بگی کیم ، ہاک آئی اور ڈی آر ایس ٹیکنالوجی کا بھی استعمال کیا جائے گا’۔

ایونٹ کو مداحوں کے لیے دلچسپ بنانے کی غرض سے دلچسپ اعداد و شمار کے لیے کرک وِز کا استعمال کیا جائے گا اور ہفتہ وار میگزین شو، پی ایس ایل کہانیاں اور خصوصی فیچرز بھی تیار کیے جائیں گے’۔

ڈائریکٹر کمرشل پی سی بی بابر حمید کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنے پروڈکشن معیارکو مزید بہتر بنانے کے لیے بہت محنت کی ہے اور پی ایس ایل 2021 کا حصہ بننے والے معروف کمنٹیٹرز کو خوش آمدید کہتے ہیں۔

خیال رہے کہ ایونٹ کا افتتاحی میچ 20 فروری کو کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جس میں کراچی کنگز اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیمیں مدمقابل ہوں گی، 30 روزہ ٹورنامنٹ کا فائنل 22 مارچ کو قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلا جائے گا۔

مزید پڑھیں: پی ایس ایل جیسا باؤلنگ کا معیار کسی اور لیگ میں نہیں، شاہد آفریدی

ایونٹ کا پہلا مرحلہ نیشنل اسٹیڈیم کراچی اور دوسرا مرحلہ لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔

دونوں شہروں میں برابر میچز کھیلے جائیں گے جبکہ تمام ٹیموں میں ڈے اور نائٹ میچز کی تقسیم بھی برابری کی بنیاد پر کی گئی ہے۔

کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر تماشائیوں کو محدود تعداد میں اسٹیڈیم آنے کی اجازت دی گئی ہے لیکن اس حوالے سے حکومتی سفارشات کو ملحوظ خاطر رکھا جائے گا۔

منبع: ڈان نیوز

0 replies

Leave a Reply

Want to join the discussion?
Feel free to contribute!

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے